News 07 January 2019

حکام بالا اسرائیل نوازی سے باز نہ آئے توعوام کے سخت ردعمل کا سامنا کرنا ہوگا، مرکزی صدر پریس کانفرنس

حکام بالا اسرائیل نوازی سے باز نہ آئے توعوام کے سخت ردعمل کا سامنا کرنا ہوگا، مرکزی صدر پریس کانفرنس

سید محمد قاسم شمسی مرکزی صدر امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان اور ڈویژنل صدر رضی عباس شمسی نے مظفر آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ آج کشمیرفلسطین، افغانستان، شام، یمن، بحرین، عراق سمیت کئی ممالک میں ہزاروں مسلمانوں کو قتل کرایا جا رہا ہے، دنیا میں جتنی بھی آزادی کی تحریکیں ہیں، ان کیخلاف عالم استعمار متحد ہوچکا ہے، امریکہ اور اس کے حواریوں کو امت مسلمہ کی سیاسی بیداری پسند نہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں گورنر راج کے بعد صدارتی نظام نافذ کرنا بھارتی بوکھلاہٹ کی دلیل ہے۔ نہتے کشمیریوں کی جدوجہ آزادی کو ظلم و دہشتگردی کے ذریعہ دبانا ممکن نہیں۔

بھارتی فوج نے کشمیریوں کیخلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال میں شدت پیدا کر دی۔ ایک ہفتہ میں 30 سے زائد کشمیری شہید کئے گئے، دنیا خاموش تماشائی نہ بنے۔ یہ وقت مظلوم کشمیریوں کیساتھ کھڑے ہونے کا ہے۔ بھارتی فوج نے کشمیر میں آپریشن آل آﺅٹ کے نام پر بدترین ظلم و دہشتگردی کا بازار گرم کر رکھا ہے۔ کشمیر کی آزادی سے پورے خطہ کے حالات تبدیل ہوں گے۔ شہداء کی قربانیوں کے نتیجہ میں تحریک آزادی عروج پر پہنچ چکی۔ کشمیر میں ایک بار پھر ظلم کی قیامت ڈھائی جارہی ہے بھارت زیادہ دیر تک اپنا غاصبانہ قبضہ برقرار رکھنے میں کامیاب نہیں ہو سکتا۔ بھارت کشمیریوں پر بدترین مظالم ڈھا رہا ہے لیکن بین الاقوامی دنیا اندھی ہو چکی ہے۔

اب تو کشمیر میں جنازوں پر فائرنگ ہو رہی ہے۔ پیلٹ گن اور کیمیائی ہتھیار استعمال کئے جا رہے ہیں۔ اس کے باوجود کشمیری نظریہ پاکستان سے پیچھے ہٹنے کیلئے تیار نہیں ہیں عالم اسلام کو اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے کشمیر، یمن اور فلسطین جیسے بڑے ہدف کیلئے اپنے اختلافات کو بھلانا ہوگا تاکہ عالم اسلام کے حقیقی مسائل کو حل کیا جا سکے۔ کشمیر کے مسئلہ کو جان بوجھ کر فراموش کیا گیا تاکہ سامراجی قوتیں اس سے فائدہ حاصل کر سکیں۔ اسلامی ممالک میں صرف آیت اللہ خامنہ ای کی پالیسی واضح اور اصولی ہے کشمیر ہر مظلوم مسلمان کی آواز ہے، ہر ایک کو کشمیر کے مسئلہ کیلئے بھرپور کردار ادا کرنا چاہئے۔

مسئلہ کشمیر اور مسئلہ فلسطین مسلم امہ کے دو ایسے مسائل ہیں، جو عالمی برادری کے جانبدارانہ رویئے کے باعث دن بہ دن گھمبیر ہوتے چلے جا رہے ہیں، صرف فلسطین و کشمیر ہی نہیں بلکہ شام، افغانستان، یمن، پاکستان، جہاں بھی سامراجی طاقتوں یا ان کے ایجنٹوں کا موقع ملتا ہے، مسلم آبادیوں میں سامراجی اور غاصب طاقتوں کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کی جا رہی ہیں، کشمیریوں کی ایک پوری نسل، آزادی کی جدوجہد پہ قربان ہوچکی ہے، جدید دنیا کو جن مسائل کا سامنا ہے، مسئلہ کشمیر و فلسطین بھی ان میں سے ایک ہے اب وقت ہے کہ پوری امت مسلمہ یکجان ہو کر یمن، فلسطین و کشمیر کے مظلومین کے حق میں آواز بلند کرے اور عالمی برادری کو کشمیریوں کے حق میں بات کرنے پر مجبور کرے۔

حکومت امیگریشن قوائد کی آڑ میں اسرائیلی شہریوں کی اجازت پر وضاحت پیش کرے اسرائیل کو تسلیم ناکرنے اور اسرائیل سے خفیہ یا اعلانیہ تعلقات کی بھرپور نفی کرتے ہوئے رسمی طور پر بیانیہ بھی جاری کرے گزشتہ دوماہ سے اسرائیل نوازی کی جارہی ہے جس کو بعد میں غلطی قراردیا جاتا ہے حکومت وقت یہ جان لے کہ ہم اسرائیل کو کسی بھی صورت قبول نہیں کریں گے اسرائیلی طیارے کی آمد ِپارلیمنٹ میں اسرائیل کے حق میں تقریر ِمیڈیا پر اسرائیل کے حق میں ٹاک شو اور اب امیگریشن قوائد کی آڑ میں اسرائیلوں کی آمد کی اجازت دیناغلطی نہیں بلکہ ایک منظم سازش کے تحت اسرائیل کو مظور کرنے کی ناکام کوشش کی جاری ہے جس کو ہرگز برداشت
نہیں کیا جائے گا ایسی گھناونی حرکتیں قائداعظم اور علامہ اقبال کے نظریات و افکار کو نابود اور فلسطین کاز کو نقصان پہنچانے کے مترادف ہیں آئی ایس او پاکستان کے کارکنان القدس کو ہرگز فراموش نہیں ہونے دیں گے۔

فلسطین کا مسئلہ آج بھی عالم اسلام کا اہم ترین مسئلہ ہے۔ مسئلہ فلسطین صرف عرب دنیا کا ہی نہیں بلکہ پوری مسلم امہ اور انسانیت کا اولین مسئلہ ہے اور اس کے منصفانہ حل کے بغیر خطے سمیت عالمی امن قائم نہیں ہو سکتا ہے فلسطین صرف فلسطینیوں کا وطن ہے، یہودیوں کا اس میں کوئی حق نہیں۔ہم ہرگز کسی بھی صورت اسرائیل کو تسلیم نہیں کریں گے۔وقت کے حکمران ایسے مکروہ فیصلوں سے باز رہی۔ 
قصہ پارینہ قرار دی گئی دہشت گردی واپس پلٹ رہی ہے اور ایک ہفتے میں ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں اضافہ ہورہا ہے۔

گزشتہ ہفتے کے دوران مختلف واقعات میں محب وطن پاکستانیوں کی ٹارگٹ کلنگ کے واقعات پیش آئے گزشتہ تین دہائیوں سے ہم نہ صرف دہشت گردی کا شکار ہیں بلکہ ریاستی ادارے بھی ہمارے لوگوں کو غائب کرنے میں مصروف ہیں۔دہشت گردی کا ناسور ایک بار پھر سر اٹھارہا ہے دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے واقعات انتہا پسندوں اور سہولت کاروں کے خلاف بھرپور آپریشن کا تقاضہ کر تے ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ کے موثر نتائج اس وقت تک حاصل نہیں ہو سکتے انہوں نے کہا ہزاروں پاکستانیوں کے قاتل اور کالعدم مذہبی جماعتوں سے دوستانہ تعلقات کو بڑھاوا دیا جارہا ہے کالعدم تنظیموں سے وابستہ عناصر کو ملک دشمن قرار دے کر ان کے خلاف بھرپور کارروائی کی جائے یہ کیسی مثالی حکومت ہے جس میں ایک ہی مکتب و فکر کے افراد کو ہی بار بار نشانہ بنایا جارہا ہے ہم ان واقعات کے ذمہ داروں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا۔

News 04 January 2019

آئی ایس او نے تعلیمی اداروں میں منشیات کیخلاف مہم کو خوش آئند قرار دیدیا

امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے رہنما شہنشاہ نقوی نے نجی و سرکاری تعلیمی اداروں میں نشہ آور اشیاءکی روک تھام کے حوالے سے آگاہی مہم چلانے کو خوش آئند قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاشرے کا بہترین طبقہ اخلاقی قدر کھو چکا ہے اور نشے سمیت دیگر غیر اخلاقی سرگرمیوں میں ملوث ہو چکا ہے، یہ طلباء اور جامعات کے ماحول دونوں کیلئے خطرے سے خالی نہیں۔

انہوں نے کہا کہ نشے میں مبتلا یونیورسٹیز کے سیکڑوں طلبہ کی زندگیاں دائوپر لگ چکی ہیں، آئے روز میڈیا پر آنیوالی رپورٹس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ جامعات میں طلباء و طالبات میں نشے کے استعمال کا رجحان بڑھتا جا رہا ہے، حکومت کو اس کے تدارک کے حوالے سے عملی اقدامات اٹھانے چاہئے۔

شہنشاہ نقوی کا کہنا تھا کہ تعلیم کیساتھ ساتھ تربیت بھی نوجوان طبقے کیلئے ضروری عمل ہے، لیکن بدقسمتی سے کالجز، یونیورسٹیز میں اس کا فقدان پایا جاتا ہے، اگر طلبہ کی اخلاقی تربیت کی جاتی تو وہ ایسی مضر سرگرمیوں میں ملوث نہ پائے جاتے، تاہم حکومت کی جانب سے ایسے طلبہ اور منشیات فروش عناصر کیخلاف کارروائی کا فیصلہ خوش آئند ہے۔

آئی ایس او کے رہنما کا کہنا تھا کہ حکومت کو اس حوالے سے بلا امتیاز کارروائی کرنی چاہیے اور کوئی دبائو قبول نہیں کرنا چاہیے کیونکہ اکثر ایسے دھندوں کے پیچھے سیاسی عناصر ہوتے ہیں۔

News 03 January 2019

حکومت امیگریشن کی آڑ میں اسرائیلی شہریوں کی اجازت پر وضاحت پیش کرے،آئی ایس او پاکستان

اسرائیل کے ساتھ کسی بھی قسم کے تعلقات کو آئین پاکستان سے غداری تصور کرتے ہیں،آئی ایس او پاکستان

حکومتِ وقت اسرائیل کو تسلیم کرنے کی کوششوں سے باز رہے،مرکزی صدر

حکومت امیگریشن قوائد کی آڑ میں اسرائیلی شہریوں کی اجازت پر وضاحت پیش کرے اسرائیل کو تسلیم ناکرنے اور اسرائیل سے خفیہ یا اعلانیہ تعلقات کی بھرپور نفی کرتے ہوئے رسمی طور پر بیانیہ بھی جاری کرے َان خیالات کا اظہار مرکزی صدر آئی ایس او پاکستان سید قاسم شمسی نے لاہور میں کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ دوماہ سے اسرائیل نوازی کی جارہی ہے جس کو بعد میں غلطی قراردیا جاتا ہے حکومت وقت یہ جان لے کہ ہم اسرائیل کو کسی بھی صورت قبول نہیں کریں گے اسرائیلی طیارے کی آمد ِپارلیمنٹ میں اسرائیل کے حق میں تقریر ِمیڈیا پر اسرائیل کے حق میں ٹاک شو اور اب امیگریشن قوائد کی آڑ میں اسرائیلوں کی آمد کی اجازت دیناغلطی نہیں بلکہ ایک منظم سازش کے تحت اسرائیل کو مظور کرنے کی ناکام کوشش کی جاری ہے جس کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا ایسی گھناونی حرکتیں قائد اعظم اور علامہ اقبال کے نظریات و افکار کو نابود اور فلسطین کاز کو نقصان پہنچانے کے مترادف ہیں۔

مرکزی صدر کا کہنا تھا کہ آئی ایس او پاکستان کے کارکنان القدس کو ہرگز فراموش نہیں ہونے دیں گے۔ فلسطین کا مسئلہ آج بھی عالم اسلام کا اہم ترین مسئلہ ہے۔مسئلہ فلسطین صرف عرب دنیا کا ہی نہیں بلکہ پوری مسلم ا مہ اور انسانیت کا اولین مسئلہ ہے اور اس کے منصفانہ حل کے بغیر خطے سمیت عالمی امن قائم نہیں ہو سکتا ہے مرکزی صدر کا کہنا تھا کہ فلسطین صرف فلسطینیوں کا وطن ہے، یہودیوں کا اس میں کوئی حق نہیں۔ہم ہرگز کسی بھی صورت اسرائیل کو تسلیم نہیں کریں گے۔وقت کے حکمران ایسے مکروہ فیصلوں سے باز رہیں۔

قاسم شمسی کا کہنا تھا کہ پاکستان بھر کی مذہبی تنظیمیں حکومت کی اس مزموم سازش کے خلاف متحد ہوکر اسرائیل کو قبول کرنے کی کوششوں کو ناکام بنائیں انہوں نے مزید کہا کہ قائد اعظم محمد علی جناح دنیا کے وہ واحد رہنما تھے کہ جنہوں نے فلسطین پر غاصبانہ طور پر قائم کی جانے والی جعلی ریاست اسرائیل کو قبول نہیں کیا تھا ۔ حکومت کی ذمہ داری ہے کہ بانیان پاکستان کے افکار و اصولوں کے خلاف سرگرم عناصر سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے چاہے وہ حکومتی صفوں میں موجود ہوں یا اپوزیشن کی صفوں میں۔

پاکستان کے عوام اپنے عظیم قائدین کے سنہرے اصولوں کے مطابق فلسطین کو فلسطینی عوام کا وطن تسلیم کرتے ہیں اور اسرائیل کو بانیان پاکستان کے اصولوں کے مطابق جعلی اور غاصب ریاست سمجھتے ہیں اور اسرائیل کے ساتھ کسی بھی قسم کے تعلقات کو قطعا نظریہ پاکستان کی نفی اور آئین پاکستان سے غداری تصور کرتے ہیں۔


یاد رہے گزشتہ دنوں ایف آئی اے کی ویب سائٹ پر 7 ممالک کے شہریوں کو پاکستان آنے کی مشروط اجازت کے قوائد و ضوابط جاری کئے گئے تھے، نئی امیگریشن قوائد کی فہرست میں اسرائیل سمیت بھارت، بنگلہ دیش، بھوٹان، نائجیریا، فلسطین اور صومالیہ کا نام شامل کیا گیا تھا۔

News 02 January 2019

شہید نمر کا ناحق خون آل سعود کے خاتمے کا پیش خیمہ ثابت ہوگا،سید قاسم شمسی

شہید نمر کا ناحق خون آل سعود کے خاتمے کا پیش خیمہ ثابت ہوگا،سید قاسم شمسی

امامیہ اسٹوڈنٹس رگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر سید قاسم شمسی نے سعودی عالم دین شہید باقر نمر کی تیسری برسی کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ عالمی استعمار، انقلاب اسلامی سے خوفزہ ہو کر حریت پسندوں کی آواز کو دبانے کی ناکام کوشش کرتا ہے اور ہمیشہ سے حریت اور آزادی اظہار کیخلاف سازشی عنصر کا کردار ادا کیا ہے اور سعودی عالم دین کو تین سال قبل قتل کرنا بھی جنونی اور بدترین فیصلہ استعماری سازش کی ایک کڑی تھا۔

مرکزی صدر نے کہا کہ عالم دین شیخ باقر النمر کو حق پسندی کی بنیاد پردی گئی۔ شہید نمر کا قصور صرف اتنا تھا کہ انہوں نے انسانی حقوق کیلئے آواز بلند کی تھی ۔شہید باقر النمر اور دیگر مزاحمت پسندوں کی سر عام گردن زنی کرکے ظلم و جبر کی تاریخ میں ایک اور سیاہ باب کا اضافہ کیا گیا جو آل سعود کے خاتمے کا پیش خیمہ ثابت ہوگی انہوں نے مزید کہا کہ شیخ نمر نے اپنی تقریروں سے اس وقت کی ظالم حکومت کو بے نقاب کیا جو اس انتقاد کو برداشت نہیں کر سکتا تھا شیخ نمر کو زندان میں ڈال دیا اور کچھ مدت کے بعد شہید کیا۔

سید قاسم شمسی کا کہنا تھا کہ اسلام کے دشمنوں کو یہ جان لینا چاہئے کہ علمائے دین اور اھل بیت علیھم السلام کے پیروکار خدا کے راستے میں شہید ہونے سے نہیں ڈرتے اور ہمیشہ سے دنیا کے مستکبروں اور بچوں کو قتل کرنے والے آل سعود کے مقابلے میں میدان میں ڈٹے رہیں گے۔

News 26 December 2018

آئی ایس او پاکستان جمعہ کو کشمیر ،فلسطین اور یمن میں انسانیت مظالم کے خلاف ملکگیر احتجاج کرے گی

آئی ایس اوپاکستان نے جمعہ کو ملک گیر" حمایت مظلومین جہاں "احتجاج کا اعلان کردیا ۔
کشمیر ہر مظلوم مسلمان کی آواز ہے، مرکزی صدر
موجودہ صدی مسلمانوں کی فتح اور طاغوت کی شکست کی صدی ہے،قاسم شمسی

امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان جمعہ کو ملک بھر میں حمایت مظلومین جہاں ریلیوں کا انعقاد کرے گی کشمیر، فلسطین اور یمن میں جاری انسانیت سوز مظالم کے خلاف ملک کے گوش و کنار میں احتجاج ریکارڈکروایاجائے گا ان خیالات کا اظہار آئی ایس او پاکستان کے مرکزی صدر سید قاسم شمسی نے مرکزی دفتر میں اجلا س کی سربراہی کرتے ہوئے کیا ۔انہوںنے مزید کہا کہ برہان مظفر وانی کی شہادت سے کشمیریوں کی جدوجہد نے نیا رخ اختیارکیا اور آزادی کی تحریک میں یونیورسٹیز کے طلبا کا بنیادی کردار شامل ہوا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ صدی مسلمانوں کی فتح اور طاغوت کی شکست کی صدی ہے فلسطین میں واپسی مارچ کئی مہینوں ے کامیابی اور نصرت کی طرف گامزن ہے ۔انہوںنے یمن میں ہزاروں بچوں کے قتل عام کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ عالم اسلام کو اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے کشمیر ،یمن اور فلسطین جیسے بڑے ہدف کے لئے اپنے اختلافات کو بھلانا ہوگا تاکہ عالم اسلام کے حقیقی مسائل کو حل کیا جا سکے۔مرکزی صدر کا کہنا تھا کہ کشمیر کے مسئلہ کو جان بوجھ کر فراموش کیا گیا تاکہ سامراجی قوتیں اس سے فائدہ حاصل کر سکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی ممالک میں صرف آیت اللہ خامنہ ای کی پالیسی واضح اور اصولی ہے کشمیر ہر مظلوم مسلمان کی آواز ہے، ہر ایک کو کشمیر کے مسئلہ کے لئے بھرپور کردار ادا کرنا چاہئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ
مسئلہ کشمیر اور مسئلہ فلسطین مسلم امہ کے دو ایسے مسائل ہیں، جو عالمی برادری کے جانبدارانہ رویئے کے باعث دن بہ دن گھمبیر ہوتے چلے جا رہے ہیں صرف فلسطین و کشمیر ہی نہیں بلکہ شام، افغانستان، یمن، پاکستان، جہاں بھی سامراجی طاقتوں یا ان کے ایجنٹوں کا موقع ملتا ہے، مسلم آبادیوں میں سامراجی اور غاصب طاقتوں کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کی جا رہی ہیں کشمیریوں کی ایک پوری نسل، آزادی کی جدوجہد پہ قربان ہوچکی ہے۔ جدید دنیا کو جن مسائل کا سامنا ہے، مسئلہ کشمیر و فلسطین بھی ان میں سے ایک ہے اب وقت ہے کہ پوری امت مسلمہ یکجان ہو کر یمن، فلسطین و کشمیر کے مظلومین کے حق میں آواز بلند کرے اور عالمی برادری کو کشمیریوں کے حق میں بات کرنے پر مجبور کرے۔

News 17 December 2018

لاہور سمیت ملک کے دیگر ڈویژن میں آئی ایس او کےسالانہ کنونشنز کا تیسرا مرحلہ مکمل

ڈاکٹر علی رضا آئی ایس او لاہور ڈویژن کے دوسری بار صدر منتخب

لاہور ( پ ر) امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان لاہور ڈویژن کا دو روزہ کنونشن اختتام پزیرہوگیا۔لاہور کے مقام امامیہ کالونی میں کنونشن کے آخری روز برادر ڈاکٹر علی رضاکو مجلس عمومی کے اراکین نے کثرت رائے سے منتخب کیا کنونشن کے آخر میں آئی ایس او پاکستان کے مرکزی صدرقاسم شمسی نے نومنتخب ڈویژنل صدر سے حلف لیا۔

آئی ایس او پاکستان کے ڈویژنل کنونشز کا تیسرا مرحلہ مکمل ہوگیا ہے لاہور سمیت ملک کے دیگر ڈویژن کے صدور کا انتخاب گزشتہ روزاراکین عمومی نے کیا ۔پہلے اوردوسرے مرحلے میں کراچی سے محمد عباس، راولپنڈی کے مسلم عباس، نصیرآباد ڈویژن کے احسان لاشاری، ملتان کے عاطف حسین، سرگودھا ڈویژن کے صدر دانش علی، ساہیوال ڈویژن کے صدر فیضان علی، آزاد کشمیر سے رضی عباس، ایاز کھوسہ ڈی جی خان سے، شاہ حبیب پشاور ڈویژن صدر منتخب ہوئے۔

News 16 December 2018

فلسطینیوں کے پرامن'' واپسی مارچ ''کی قربانیاں جلد رنگ لائیں گی ،مرکزی صدر

فلسطین فائونڈیشن کے سیکرٹری جنرل ابو مریم کی وفد کے ہمراہ آئی ایس او پاکستان کے مرکزی دفتر آمد ،مرکزی صدر سے ملاقات۔

فلسطین فائونڈیشن پاکستان کے سیکرٹری جنرل ابو مریم نے وفد کے ہمراہ نو منتخب مرکزی صدر برادر قاسم شمسی سے ملاقات کی صدر منتخب ہونے پر نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا دونوں رہنمائوں نے ملاقات میں فلسطین کی تازہ ترین صورتحال بھی تبادلہ خیال کیا۔

فلسطین فائونڈیشن کے رہنماء کا کہنا تھا کہ ہم کسی صورت مسئلہ فلسطین کو فراموش نہیں کرنے دیں گے پاکستان میں اسرائیل کو منظور کرنے کی جو مذموم کوششیں کی جاری ہیں اس کے لئے ہم وزیر اعظم اور صدر مملکت کے نام خط لکھا ہے۔ خط میں اس بات پہ زور دیا گیا ہے کہ پاکستان میں فلسطین مخالف پراپیگنڈا کی اجازت ہر گز نہ دی جائے اور اس کی روک تھام کے لئے سخت سے سخت اقدامات سے گریز نہ کیا جائے اور اس عنوان سے سنجیدہ نوعیت کے اقدامات کئے جائیں تا کہ مستقبل میں صہیونی ایجنٹوں کے ناپاک ارادے خاک ہو جائیں۔

ابو مریم کا مزید کہنا تھا کہ فلسطینی نوجوانوں میںچند ماہ سے جاری و اپسی مارچ کے بعد ایک نئی امید پیدا ہوئی ہے فسلطین میں اب ظلم کے مقابلے میں جدوجہد اور قربانیاں پہلے زیادہ ہوچکی ہیں انشاء اللہ وہ دن دور نہیں جب اسرائیل کا ناپاک وجود فلسطین سے ختم ہوجائے گا۔


مرکزی صدر سید قاسم شمسی کا کہنا تھا کہ آئی ایس او پاکستان نے ہمیشہ فلسطین کی حمایت کی ہے ماہ رمضان میں پاکستان بھر میں القدس ریلوں کا اہتمام کیا جاتا ہے اور بیت المقدس کی آزادی کا مطالبہ کیا جاتا ہے فلسطین میں صیہونی کی پسپائی خوش آئند ہے اور انشاء اللہ رہبر معظم کا یہ جملہ "اسرائیل کا 25سال میں زوال یقینی ہے" سچ ثابت ہوگا۔ مرکزی صدر کا کہنا تھا کہ پاکستان کے عوام فلسطین کی عرب ریاست کی حمایت کرتے ہیں کہ جہاں ہمیشہ سے یہودی، عیسائی و مسلمان عرب شناخت کے ساتھ فلسطین میں بستے رہے ہیں جبکہ غیر فلسطینی یہودیوں کو جن کو باہر سے لاکر آباد کیا گیا ہے ان کا فلسطین پر کوئی حق نہیں۔

یہ فلسطینیوں کا حق ہے کہ وہ اپنے وطن واپس آئیں۔ وہ تمام فلسطینی کہ جن کو صہیونیوں نے فلسطین سے بے دخل کیا ہے اور وہ مختلف سرحدی ممالک میں پناہ گزین کیمپوں میں زندگی بسر کر رہے ہیں ان کے حق واپسی کی عالمی سطح پر بھرپور حمایت کی جائے تا کہ فلسطینی عرب اپنے وطن لوٹ آئیں اور آزاد ریاست کے قیام کو یقینی بنائیں۔

مرکزی صدر کا کہنا تھا کہ مارچ سے شروع ہونے والے واپسی مارچ میں فلسطینیوں کی قربانیاں رنگ لائیں گی اور فتح مبین نصیب ہوگی۔ فلسطین فائونڈیشن کے سیکرٹر ی جنرل کے ہمراہ میڈیا کوارڈینٹر یاسر عباس ہمراہ تھے انہوں نے مرکزی صدر کو گلدستہ بھی پیش کیا۔

News 16 December 2018

شہدائے سانحہ پشاورکا ناحق خون انتہا پسندی کے خلاف علامت بنا کر ابھرا،مرکزی صدر

سانحہ پشاور ظلم و بربریت اور انتہا پسندی کی بدترین مثال تھا ،مرکزی صدر سید قاسم شمسی

شہدا پشاور کے پیغام کو زندہ رکھتے ہوئے علم کی شمع کوہرگز بجھنے نہیں دیں گے،آئی ایس او پاکستان

سانحہ پشاور پاکستان کی تاریخ کا بدترین سانحہ ہے جس میں پاکستان کے بہترین مستقبل پر حملہ کیا گیا تھا۔ مرکزی صدر آئی ایس او پاکستان قاسم شمسی نے سانحہ پشاور کے شہدا کی برسی کے موقع پراپنے پیغام میں کہا ہے کہ سانحہ
پشاور میں درندوں نے اپنی سفاکیت، اسلام دشمنی، پاکستان دشمنی اور تعلیم دشمنی کا ثبوت دیتے ہوئے معصوم پھولوں پر حملہ کر کے سینکڑوں کو شہید اور درجنوں کو زخمی کرکے بہت سی مائوں کی گود کو اجاڑ دیا تھا۔

سانحہ آرمی پبلک سکول میں قیمتی اور معصوم انسانی جانوں کا ضیاع وہ ناقابل تلافی نقصان ہے جسے کبھی فراموش نہیں کیا جا سکے گا۔انہوں نے کہ دہشت گرد گروہوں نے مختلف مقامات کو نشانہ بنا کر ارض پاک کو ایسے قابل اور ہونہار افراد سے محروم کیا جو قوم کا قیمتی سرمایہ تھے۔شہیدطلبہ کی برسی کے موقع پرتعلیم و علم دشمنوں سے بیزاری کا اظہار کرتے ہوئے اس عزم کا اظہا رکرنا ہوگا کہ ہم شہدا پشاور کے پیغام کو زندہ رکھیں گے اور علم کی شمع کوہرگز بجھنے نہیں دیں گے۔

مرکزی صدر نے کہا انتہا پسندوںکے حامیوں کیخلاف بھی کارروائی کی جائے جو اسلام کے حقیقی چہرہ کو مسخ کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں استحکام پاکستان، تکفیری مائنڈسیٹ کے خاتمہ میں مضمر ہے پوری قوم پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔
News 10 December 2018

آئی ایس او پاکستان کے 5ڈویژنل صدور کا انتخاب ہوگیا

آئی ایس او پاکستان کے 5ڈویژنل صدور کا انتخاب ہوگیا

آئی ایس او لاہور کے نئے صدر کا انتخاب اتوار کوہوگا۔


امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی میڈیا کوارڈینیٹر تقی حسن کے مطابق مرکزی کنونشن کے بعد ڈویژنل اور یونٹس کنونشنز کا سلسلہ جاری ہے، اب تک 5 ڈویژنز میں کنونشن منعقد ہوچکا ہے، جبکہ لاہور سمیت باقی ماندہ ڈویژن میں کنونشن رواں ہفتے ہوگا۔ جس میں تعلیمی اداروں کے طلباءشریک ہونگے۔

اس موقع پر تعلیمی کانفرنسس کا بھی اہتمام کیا جائے گا جبکہ مرکزی نمائندگان کی نگرانی میں انتخابی مرحلہ ہوگا۔ جس کی نتیجے میں نئے ڈویژنل صدرور کا انتخاب عمل میں لایا جائے گا۔

یاد رہے آئی ایس او ایک طلبا تنظیم ہے جس کی بنیاد 1972 میں شہید ڈاکٹر محمد علی نقوی نے رکھی، اس کا اسٹرکچر ملک بھر کے تعلیمی اداروں میں موجود ہیں اور تعلیم و تربیت سے مستفید ہورہے ہیں۔ آئی ایس او کے ملک بھر میں 500 سے زائد یونٹس ہیں جن کے سالانہ کنونشنز کا سلسلہ بھی جاری ہے ڈویژنل کنونشن کے پہلے مرحلے میں کراچی سے محمد عباس، راولپنڈی کے مسلم عباس، نصیرآباد ڈویژن کے احسان لاشاری، ملتان کے عاطف حسین، شاہ حبیب پشاور ڈویژن کے صدر منتخب ہوئے۔

News 06 December 2018

سوشل میڈیا سے جامعات کے طلبہ میں باطل نظریات کو فروغ دیا جارہا ہے،قاسم شمسی

نوجوان سوشل میڈیا سے یمن ،فلسطین اور کشمیریوں پر جاری مظالم کو اجاگر کریں ۔مرکزی صدر قاسم شمسی

سوشل میڈیا کے ذریعے سے لبرل ازم سمیت دیگر باطل نظریات کو فروغ دیا جارہا ہے۔سوشل میڈیا اور خاص طور پر مقبول ترین سوشل نیٹ ورکنگ سائٹ فیس بک پر جاری منفی اور غیراخلاقی سرگرمیاں ہمارے معاشرے میں انتہا پسندی اور بے راہ روی کو فروغ دینے کا باعث بن رہی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار مرکزی صدر آئی ایس او پاکستان سید محمد قاسم شمسی نے لاہور میں تنظیم کے مرکزی سیکرٹریٹ میں میڈیا ٹیم کے اجلاس کی سربراہی کرتے ہوئے کیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہہ ہمیں سوشل میڈیا کے نقصانات کے بارے میں جوانوں کو آگاہ کرنا ہوگا۔دورحاضر میں میڈیا اوربالخصوص سوشل میڈیا کی اہمیت اور طاقت سے انکار نہیں کیا جا سکتا لیکن انفارمیشن ٹیکنالوجی کے اس دورمیں جہاں سوشل میڈیا کے فائدے ہیں تو نقصانات بھی بہت ہیں۔ ایسے میں ضروری ہے کہ اس کے مضر اثرات اور نقصانات سے نئی نسل کو نہ صرف واقف کیا جائے بلکہ بچایا بھی جائے میڈیا موجودہ دور میں موثر ترین ہتھیار کا درجہ رکھتا ہے۔

دنیا کی بڑی طاقتیں مفادات کے حصول کے لیے ذرائع ابلاغ کا استعمال کر رہی ہیں۔انہوںنے مزید کہاکہ نوجوان سوشل میڈیا کو اسلام و پاکستان کے دفاع،یمن فلسطین اور کشمیر میں ڈھائے گئے مظالم کو منظر عام پر لانے کے لیے استعمال کریں مسلمانوں کو کبھی بھی طاقت کے بل بوتے پر زیر نہیں کیا جا سکا، یہی وجہ ہے کہ اب میڈیا کے ذریعے داعش سمیت دیگر باطل نظریات اسلام کی حقیقی نظریات و افکار پر کاری ضربیں لگائی جا رہی ہیں۔

مرکزی صدر کا کہنا تھا کہ آئی ایس او پاکستان نے لاہور میں جامعات کے طلبہ کے لئے سوشل میڈیا ورکشاپ کا انعقاد کیا یہ سلسلہ ملک بھر میں پھیلاجائے گا ۔اجلاس میں سابق سیکرٹری اطلاعات سجیل شمسی،نسیم کربلائی،اصغر علی،سابق مرکزی صدر یافث نوید ،تہور حیدری اور انصر مہدی نے شرکت کی ۔

Picture Gallery